معذور دوست کو روزانہ پیٹھ پر لاد کر اسکول لے جانے والا 12 سالہ بچہ

چین میں 12 سالہ بچہ اپنے دوست کو روزانہ پیٹھ پر سوار کرکے اسے گھر سے اسکول اور اسکول سے گھر تک لاتا ہے (فوٹو: اوڈٹی سینٹرل)

چین میں 12 سالہ بچہ اپنے دوست کو روزانہ پیٹھ پر سوار کرکے اسے گھر سے اسکول اور اسکول سے گھر تک لاتا ہے (فوٹو: اوڈٹی سینٹرل)

بیجنگ: ایثار، ہمت اور دوستی کی ایک غیر معمولی خبر چین سے آئی ہے جہاں 12 سالہ ایک بچہ روزانہ اپنے معذور دوست کو پیٹھ پر سوار کرکے گھر سے اسکول اور اسکول سے گھر لے جاتا ہے اور بیت الخلا تک پہنچانے میں بھی اس کی مدد کرتا ہے۔ یہ خدمت وہ مسلسل چھ برس سے انجام دے رہا ہے۔

چین کے صوبے سچوان کے علاقے میشان سے تعلق رکھنے والے اس ہیرو بچے کا نام ژیوبنگ یانگ ہے۔ پہلی جماعت میں اس کا دوست زینگ ہی ایک مرض، ’ مائیستھینیا گرے وِس‘ کا شکار ہوگیا اور دھیرے دھیرے اس کی ٹانگیں بے کار ہوگئیں۔ اب وہ اسکول آنے جانے سے معذور ہوگیا، ایسے وقت میں ژیوبنگ یانگ نے اس کی جانب مدد کے لیے ہاتھ آگے بڑھایا اور اسے اسکول لانے اور لے جانے لگا۔ اس کے بعد یہ سلسلہ چھ سال سے جاری رہا اور اب بھی وہ اپنے دوست کو پیٹھ پر سوار کرکے اسکول تک لاتا ہے۔

ژیوبنگ یانگ نے کہا کہ میرا وزن 40 کلوگرام اور میرے دوست زینگ ہی کا وزن 25 کلوگرام ہے اور اسی بنا پر میں اسے آرام سے اٹھالیتا ہوں۔ اب دھوپ اور بارش سے بے نیاز وہ اپنے دوست کو سیڑھیاں چڑھ کر کلاس روم تک چھوڑتا ہے۔ درمیان میں دو دوسرے ہم جماعتوں نے زینگ ہی کی ذمے داری سنبھالی لیکن وہ جلد ہی ہانپ گئے تاہم یانگ کی مدد جاری رہی اور اس نے کسی سے اس کی شکایت نہیں کی یہاں تک کہ اپنی والدہ کو بھی نہیں بتایا۔

یہی وجہ ہے کہ اسکول کے سارے اساتذہ اس سے محبت کرتے ہیں اور اس کی بے لوث خدمت کے معترف ہیں۔ اس کے علاوہ وہ اپنے دوست زینگ ہی کی تعلیم میں مدد کرتے ہیں اس سے بات کرکے اس کا دل بھی بہلاتے ہیں۔



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں