رواں مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں غیرملکی سرمایہ کاری میں 74.8 فیصد کمی، اسٹیٹ بینک

سات ماہ میں مجموعی غیرملکی سرمایہ کاری ایک ارب 4 کروڑ ڈالر رہی، اسٹیٹ بیننک۔ فوٹو: فائل

سات ماہ میں مجموعی غیرملکی سرمایہ کاری ایک ارب 4 کروڑ ڈالر رہی، اسٹیٹ بیننک۔ فوٹو: فائل

کراچی: اسٹیٹ بینک کے اعدادو شمار کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے 7 ماہ میں غیرملکی سرمایہ کاروں نے اسٹاک مارکیٹ سے 40 کروڑ 89 لاکھ ڈالر کا سرمایہ نکال لیا، جب کہ گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں رواں سال جولائی تا جنوری مجموعی غیرملکی سرمایہ کاری 74.8 فیصد کم رہی۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی جانب سے جاری ہونے والے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ مالی سال کے مقابلے میں رواں سال جولائی تا جنوری مجموعی غیرملکی سرمایہ کاری 74.8 فیصد کم رہی، سات ماہ میں مجموعی غیرملکی سرمایہ کاری ایک ارب 4 کروڑ ڈالر رہی جب کہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران 4 ارب 14 کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری ہوئی تھی۔

اعداد د شمار میں بتایا گیا ہے کہ رواں مالی سال کے پہلے سات ماہ میں غیرملکی سرمایہ کاری گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 3 ارب 9 کروڑ ڈالر کم رہی، سات ماہ کے دوران براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری 17.6 فیصد کمی سے ایک ارب 45 کروڑ ڈالر رہی، جب کہ غیرملکی سرمایہ کاروں نے رواں مالی سال کے پہلے سات ماہ میں اسٹاک مارکیٹ سے 40 کروڑ 89 لاکھ ڈالر کا سرمایہ نکال لیا۔

اعداد و شمار کے مطابق جنوری 2019 میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کی مالیت 13 کروڑ 22 لاکھ ڈالر، مجموعی غیرملکی سرمایہ کاری 14 کروڑ 30 لاکھ ڈالر، جب کہ جنوری میں اسٹاک مارکیٹ میں غیرملکی سرمایہ کاری ایک کروڑ ڈالر رہی۔

 



اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں